23 June, 2016 21:03

NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

23-JUNE-2016

امجد صابری حمد و ثنا کے حوالے سے پہچانے جاتے تھے اور پہچانے جاتے رہیں گے۔ اسحق ڈار کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

امجد صابری کے قاتلوں کو پکڑنے کے لئیے چوہدری نثار خود اور صوبائی حکومت سے مل کر کوششیں کر رہے ہیں۔

ایک ہفتے میں کراچی کے اندر تین واقعات کا ہونا کوئی اچھی خبر نہیں ہے۔

ملک آئین کے مطابق چل رہا ہے اور اس میں یہ نہیں لکھا کہ وزیراعظم کے بغیر ملک کس طرح چلے گا۔

آئین میں ایک بات لکھی ہے کہ وزیراعظم اپنے اختیارات کسی دوسری کے حوالے کر سکتا ہے۔

بجٹ کے موقع پر وزیراعظم نے لندن سے کابینہ کی میٹنگ چیر کی اور اس کے بعد آپریشن کے لئیے ہسپتال گئے۔

وزیراعظم کی غیر موجودگی میں اس کے اختیارات کسی اور کے حوالے کئیے جانے کی گنجائش پیدا کرنے کے لئیے آئین میں ترمیم کرنی پڑے گی۔

آرمی چیف کی وزرا کے ساتھ میٹنگ کو میڈیا میں غلط انداز میں پیش کیا جا رہا ہے۔

ہماری آرمی چیف کے ساتھ میٹنگ سکیورٹی کے حوالے سے تھی۔

میں بجٹ میں مصروف تھا مجھے کہا گیا کہ میٹبنگ کے لئیے دو گھنٹے نکالیں میری وجہ سے میٹنگ کو تھوڑا لیٹ کیا گیا۔

آرمی چیف کے ساتھ میٹنگ میں طے ہوا کہ حکومت کے ساتھ مل کر سکیورٹی کے حوالے سے ایک روڈ میپ بنایا جائے۔

ہمارا آرمی چیف کے ساتھ بھائیوں والا اور دوستانہ تعلق ہے۔

الیکشن کمشن کی تعیناتی کے لئیے آئین میں بائیسویں ترمیم کی گئی ہے۔

الیکشن کمشن کی تعیناتی کے لئیے کام شروع کر دیا ہے اور حکومت اور اپوزیشن لیڈر نے تین تین نام دے دئیے ہیں۔

ٹی او آرز کے مسئلے پر کوئی ڈیڈ لاک نہیں ہے سیاست میں کوئی ڈیڈ لاک نہیں ہوتا۔

حکومت اور اپوزیشن نے اپنے اپنے ٹی او آرز بنائے ہوئے ہیں۔

میں نے خورشید شاہ صاحب سے درخواست کی ہے کہ ٹی او آرز کے مسئلے پر دوبارہ مل کر بیٹھ جایں۔

زیادہ بہتر ہو گا کہ حکومت اور اپوزیشن اپنے اپنے ٹی او آرز کو پارلیمنٹ میں پیش کر دیں۔

پروگرام میں امجد صابری کے بھائی ثروت صابری سے بھی گفتگو کی گئی جو اس طرح تھی۔

امجد صابری کو کوئی مخصوص نہیں بلکہ ایک جنرل تھریٹ تھا۔ ثروت صابری

امجد صابری پر کسی سیاسی جماعت کی طرف سے شامل ہونے کے لئیے کوئی دباؤ نہیں تھا۔

میں نے آرمی چیف سے امجد کے قاتوں کی گرفتاری کے لئیے اپیل کی ہے کیونکہ مین آف دی مومنٹ وہی ہیں۔

روٹی پانی بجلی تو نہیں ہے حکومت کم از کم لوگوں کو سکیورٹی تو دے دے۔

بڑے آدمیوں کی تو ہر کوئی بات کرتا ہے عام آدمی کی سکیورٹی کو یقینی بنایا جائے۔

چھوٹے چھوٹے قاتلوں کو پکڑنے سے کچھ نہیں ہو گا جو لوگ ان کے پیچھے ہیں ان کو پکڑا جائے۔