6 April, 2016 21:05

NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

06-APRIL-2016

آف شور کمپنیاں پیسہ چھپانے یا پھر ٹیکس چھپانے کے لئیے بنائی جاتی ہیں۔ اسد عمر کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

ایک آزاد کمشن بننا چاہئیے جو پانامہ پیپرز کی تحقیقات کرے۔ اسد عمر

تحقیقات کیونکہ وزیراعظم اور ان کے خاندان کی ہونی ہیں اس لئیے کمشن پر وزیراعظم کا کنٹرول نہیں ہونا چاہئیے۔ اسد عمر

وزیراعظم کے خلاف ایکشن لینے کی زمہ داری اٹارنی جنرل کی ہے انہیں ایکشن لینا چاہئیے۔ اسد عمر

میاں صاحب کے خلاف جتنے بھی مقدمات بنے ان میں سے کسی کا بھی فیصلہ میرٹ پر نہیں ہوا۔ سعید غنی

ہمارے دور میں نواز شریف کسی بھی چیرمین نیب کو اس لئیے نہیں ٹکنے دیتے تھے کیونکہ اس نے کیس کو دستخط کر کے آگے بھیجنا ہوتا ہے۔ سعید غنی

وزیراعظم نے اپنی تقریر میں ہر بات کا زکر کیا لیکن اصل بات کا زکر نہیں کیا۔ اسد عمر

میری ملک سے باہر آج یا جب سے پیدا ہوا ہوں کوئی جائیداد ثابت ہو جائے تو مجھے پھانسی پر لٹکا دیا جائے۔ اسد عمر

اگر مجھ پر لگایا گیا الزام غلط ثابت ہو جائے تو پھر میاں نواز اور شہباز شریف کو پھانسی نہ لگایا جائے لیکن جیل بھیجا جائے۔ اسد عمر

میاں نواز شریف کے خلاف الزامات ثابت ہو جایں تو انہیں وہی سزا ملنی چاہئیے جو قانون کہتا ہے۔ عبدالقادر بلوچ

وزیراعظم نے خود پر لگنے والے الزامات پر سپریم کورٹ کے جج پر مشتمل ایک کمشن بنا دیا ہے۔ عبدالقادر بلوچ

وزیراعظم کا یہ اختیار ہی نہیں ہے کہ وہ خود اپنے خلاف کمشن بنایں یہ کام سپریم کورٹ کے چیف جسٹس کا ہے۔ سعید غنی

آف شور کمپنی بنانا کوئی جرم نہیں ہے لیکن سوال یہ ہے کہ پیسہ آیا کہاں سے تھا۔ سعید غنی

ملسم لیگ ن کی طرف سے کہا جا رہا ہے کہ پانامہ پیپرز کے الزامات عمران خان لگا رہے ہیں یہ الزامات عالمی طور پر لگے ہیں۔ سد عمر

پوری دنیا میں پانامہ پیپرز پر تحقیقات ہو رہی ہیں اور یہاں قوم کو یہ بتایا جا رہا ہے کہ کہ وزیراعظم اور ان کے والد بہت اچھے بزنس میں تھے۔ اسد عمر

ایف آئی اے یا نیب سے تحقیقات کروائی جا سکتی ہیں لیکن ان پر اعتماد نہیں کیا جا سکتا۔ سعید غنی

پاکستان کا پیسہ باہر لے جانا معاشی قتل ہے اس لئیے اس جرم میں وہی سزا ملنی چاہئیے جو قاتل کو ملتی ہے۔ اسد عمر

ہم پر الزامات لگائے جا رہے ہیں کسی کو وکئی اعتراض ہے تو کیس کو لندن کی عدالت میں لے جائے۔ عبدالقادر بلوچ