3 November, 2015 21:42

NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

03-NOVEMBER-2015

الطاف حسین کی تقریر اور تصویر دکھانے پر پابندی برقرار رہنی چاہئیے۔ قمر زمان کائرہ کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

آئین میں فوج اور عدلیہ کے خلاف بات کرنے سے منع کیا گیا ہے اور ملک کے خلاف بات کرنا تو اس سے بھی بڑا جرم ہے۔ کائرہ

اگر کسی ادارے یا جج نے کوئی غلط کام کیا ہے تو تنقید کی جانی چاہئیے لیکن بحیثیت ادارہ الزام تراشی نہیں ہونی چاہئیے۔ کائرہ

ہم پہلے چارج شیٹ لگاتے ہیں بعد میں کہتے ہیں کہ افہام و تمہید ہو گیا ہے اگر جرم ہوا ہے تو پھر افہام و تمہید نہیں ہو سکتے۔ کائرہ

میں سمجھتا ہوں کہ اداروں کو ایک لائین ڈرا کرنے کی ضرورت ہے۔ ڈاکٹر مصدق ملک

میں الطاف حسین کے متعلق کائرہ صاحب کی بات سے اتفاق کرتا ہوں لیکن اگر جرم ہوا ہے تو پھر سزا دیں۔ عارف علوی

جو کیس عدالت میں ہو اس کے بارے میں بات نہیں ہونی چاہئیے۔ بیرسٹر سیف

ہمیں عدالت کے حکم پر کوئی اعتراض نہیں ہے ہمیں اعتراض صرف یہ ہے کہ سرکاری وکیل کو عدالت میں حکومت کا موقف پیش کرنا چاہئیے تھا۔ بیرصتر سیف

حکومت کے پاس اس بات کا اختیار نہیں ہوتا کہ جس کیس کی ایف آئی آر کٹ چکی ہو اسے واپس لے لے یا کوئی مزاکرات کرے۔ کائرہ

بلدیاتی انتخابات کے نتائج سے کسی سیاسی جماعت کے ووٹوں کا اندازہ نہیں ہوتا یہ شخصیتوں پر منحصر ہوتے ہیں۔کائرہ

سندھ میں پیپلز پارٹی بلدیاتی انتخابات اس لئیے جیتی کہ وہاں ہماری حکومت ہے اور ہمارا تھانیدار ہے۔ کائرہ

میں نے عمران خان کو بتایا تھا کہ پی ٹی آئی سندھ میں پانچ سے دس فیصد سیٹیں جیتے گی اور ہم ساڑھے چار فیصد جیت گئے ہیں۔ عارف علوی

پیپلز پارٹی سندھ کی سب سے مقبول جماعت ہے اور وہ وہاں سے بلدیاتی الیکشن جیتی ہے۔ عارف علوی

پی ٹی آئی کے سندھ میں دو سو امیدوار تھے اور سب کے خلاف ایف آئی آر کاٹ دی گئیں۔ عارف علوی

سندھ میں پیپلز پارٹی کے سات سو امیدوار بلا مقابلہ منتخب ہو گئے یہ عجیب قسم کا رحجان ہے۔ عارف علوی

عمر کوٹ میں ایک عورت کو یہ کہہ کر طلاق کے کاغز بھجوا دئیے گئے کہ ووٹ نہ دیا تو طلاق ہو جائے گی۔ عارف علوی

بلدیاتی انتخابات میں بھی ووٹروں کا پہلے والا رحجان ہی دکھائی دے رہا ہے۔ ڈاکٹر مصدق ملک

سندھ میں بلا مقابلہ منتخب ہونے والے لوگوں نے اگر کچھ غلط کیا ہے تو الیکشن کمشن کو شکایت کی جانی چاہئیے۔ کائرہ

صوبائی حکومتیں بلدیاتی انتخابات نہیں کروانا چاہتی تھیں سپریم کورٹ کے زور دینے پر ہوئے۔ کائرہ

مشرف دور میں بلدیاتی نظام کو جتنے اختیارات دئیے گئے وہ پہلے کبھی نہیں دئیے گئے۔ کائرہ

انتخابات نظام میں مثبت تبدیلیاں لانے کے لئیے پی ٹی آئی، مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی مل کر کام کر رہی ہیں مسئلہ ان کو لاگو کرنے کا ہے۔ عارف علوی

انتخابی نظام کو بہتر بنانے سے زیادہ ضروری کام جمہوریت کا تسلسل ہے بلدیاتی نظام کو جمہوریت کے متبادل کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔ ڈاکٹر مصدق ملک

میں لالہ موسی سے بلدیاتی انتخاب اس لئیے جیتا کیونکہ میں کارکنوں کے پاس گیا اور ناراض کارکنوں کو منایا۔ کائرہ

لوگ بلدیاتی انتخاب سسٹم کو بہتر بناننے کے لئیے نہیں بلکہ دوسری برادری کو زچ کرنے کے لئیے لڑتے ہیں۔ کائرہ

دو ہزار تیرہ کے انتخابات میں جن لوگوں نے غلطیاں کیں ان کے لئیے جزا اور سزا کا سسٹم ہونا چاہئیے۔ عارف علوی

پاکستان جیوڈیشری ناکام ہو رہی ہے کانجو اور ایان علی کے کیس دیکھ لیں۔ عارف علوی