12 October, 2015 21:29

NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

12-OCTOBER-2015

ہم نے بار بار کہا تھا کہ پر پول رگنگ ہو رہی ہے وفاق وزیر الیکشن مہم چلاتے رہے۔ چوہدری سرور کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

وفاقی اور پنجاب حکومت کے تمام وسائل این اے ایک سو بائیس کی انتخابی مہم پر استعمال ہوئے۔ چوہدری سرور

ہم نے تمام باتوں کے باوجود الیکشن میں حصہ لیا کیونکہ ہم ملک میں جمہوریت چاہتے ہیں۔ چوہدری سرور

دن کو جو الیکشن ہوا وہاں انتظامی نظام بالکل ٹھیک تھا۔ چوہدری سرور

ایک شکایت بہت زیادہ ملی ہے کہ جن لوگوں نے پچھلے انتخابات میں این اے ایک سو بائیس میں ووٹ ڈالا تھا ان کا ووٹ دوسرے حلقوں میں منتقل کر دئیا گیا ہے۔ چوہدری سرور

ہم کوئی رائے دینے سے پہلے کسی شک سے بالا تر ثبوت حاصل کرنا چاہتے ہیں۔ چوہدری سرور

ہمارے پاس سو کے قریب لوگوں کے ثبوت آئے ہیں کہ انہیں پی ٹی آئی کے حق میں ووٹ نہیں ڈالنے دیا گیا۔ چوہدری سرور

ہم اپنی تسلی کرنا چاہتے کہ منظم انداز میں دھنادلی کی گئی یا نہیں۔ چوہدری سرور

بہت سے لوگوں کے ووٹ حلقہ ایک سو بائیس میں سے نکال دئیے گئے اور بہت سے شامل کئیے گئے ہیں۔ چوہدری سرور

ہم کسی مفروضے پر بات نہیں کریں گے پہلے اپنا اطمینان کریں گے پھر بات کریں گے۔ چوہدری سرور

اس دفعہ بھی این اے ایک سو بائیس کا نتیجہ دو ہزار تیرہ کے الیکشن جیسا ہی ہے۔ رانا ثنا اللہ

الیکشن فوج کی نگرانی اور سی سی ٹی وی کیمروں کی موجودگی میں ہوا دھاندلی کیسے ہو سکتی ہے۔ رانا ثنا اللہ

جیودیشل کمشن نے اگر انگوٹھے کا نشان ٹھیک نہیں تھا تو اسے بوگس ووٹ قرار دیا۔ سلمان اکرم راجہ

اگر کسی شناختی کارڈ کا ایک ہندسہ غلط تھا تو الیکشن کمشن نے اسے بھی بوگس ووٹ شمار کیا۔ سلمان اکرم راجہ

ہمیں الیکشن کمشن میں اصلاحات کرنے کی سخت ضرورت ہے۔ شرمین عثمانی

الیکشن کمشن میں صرف ججوں کو ہی تعینات کرنا ضروری نہیں ہے۔ شرمین عثمانی

پارلیمنٹ میں بحث جاری ہے کہ الیکشن کمشن میں صرف ججوں کو ہی نہیں لگانا چاہئیے۔ رانا ثنا اللہ

بہت سے وکلا بھی اچھا علم رکھتے ہیں انہیں بھی الیکشن کمشن میں تعینات لگایا جا سکتا ہے۔ رانا ثنا اللہ

الیکشن کے دوران بے پناہ پیسہ خرچ کرنے کی بات سب کرتے ہیں لیکن الیکشن کمشن کو اس کے خلاف درخواست کسی نے نہیں دی۔ رانا ْثنا اللہ

ضروری نہیں ہے کہ الیکشن کمشن میں صرف ججوں کو ہی لگایا جائے بھارت میں ایسا نہیں کیا جاتا۔ سلمان اکرم راجہ

این اے ایک سو بائیس میں بے تحاشہ پیسہ خرچ کیا گیا تو الیکشن کمشن کو اس کا نوٹس لینا چاہئیے تھا۔ سلمان اکرم راجہ

فارم چودہ اور پندرہ کا مسئلہ اٹھانے کا کریڈٹ پی ٹی آئی کو جاتا ہے پہلے اس پر بات نہیں کی جاتی تھی۔ سلمان اکرم راجہ

جج لگانے کے لئیے لوگوں سے پوچھا جاتا ہے کہ کس نے جج لگنا ہے تو پھر انصاف میں تاخیر تو ہو گی۔ شرمین عثمانی

انتخابی اصلاحات کا دارومدار اس بات پر ہے کہ آئیندہ عمران خان کیا لائحہ عمل اختیار کرتے ہیں۔ رانا ثنا اللہ

عمران خان کو اب ایک تعمیری اپوزیشن کا کردار ادا کرنا چاہئیے اور وہ اس کی پوری اہلیت رکھتے ہیں۔ رانا ثنا اللہ

این اے ایک سو بائیس میں بیگ رکھنے اور سیلیں لگانے کے طریقہ کار میں تبدیلی کی گئی ہے یہ اصلاحات ہی ہیں۔ سلمان اکرم راجہ

ہمیں معاملات درست کرنے کے لئیے نیک نیتی کی ضرورت ہے۔ شرمین عثمانی