27 April, 2015 21:10

NADEEM MALIK LIVE

samaa.tv/nadeemmaliklive/

27-APRIL-2015

چیف منسٹر کے عہدے پر فائز شخص میں دو چیزیں ضرور ہونی چاہئییں ایک صبر اور دوسرے بات سننے کا حوصلہْ۔ خالد مقبول صدیقی کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

موجودہ زمانے کا تقاضہ ہے کہ آپ کو کام کرتے ہوئے دکھائی بھی دینا چاہئیے۔ شفقت محمود

چیف منسٹر کے پی کے چوبیس گھنٹوں کے بعد زخمیوں کو دیکھنے ہسپتال پہنچے انہیں فوری طور پر آنا چاہئیے تھا۔ رانا ثنا اللہ

تحریک انصاف میں صرف شور شرابہ اور ہلہ گلا ہوتا ہے انتخاب لڑنے اور کام کرنے میں سنجیدہ نہیں ہوتی۔ رانا ثنا اللہ

سانحہ ماڈل ٹاؤن لاہور میں پولیس آٹھ گھنٹوں تک لوگوں کو سیدھی گولیاں مارتی رہی لیکن چیف منسٹر پنجاب نے کہ کہا کہ انہیں کسی بات کا علم ہی نہیں تھا۔ شفقت محمود

کنٹونمنٹ بورڈ کے انتخابات پورے ملک کے رحجان کی غمازی نہیں کرتے ہیں۔ سعید غنی

لاہور میں مسلم لیگ ن اور پی ٹی آئی کے ووٹوں میں کمی ہوئی جبکہ پیپلز پارٹی کے ووٹوں میں پچاس فیصد اضافہ ہوا ہے۔ سعید غنی

ایم کیو ایم نے کراچی کنٹونمنٹ بورڈ کی چودہ جبکہ حیدرآباد سے چھ سیٹیں جیتی ہیں۔ خالد مقبول صدیقی

پی ٹی آئی نے پورے ملک سے کنٹونمٹ بورڈ کی چوالیس سیٹیں جیتی ہیں۔ شفقت محمود

پیپلز پارٹی کی آرگنائزیشن میں کچھ مسائل ہیں پارٹی میں انہیں حل کرنے پر بات ہو رہی ہے۔ سعید غنی

کنٹونمنٹ بورڈ کے انتخابات کے رزلٹ نے ثابت کر دیا ہے کہ لوگوں نے پی ٹی آئی کو مسترد کر دیا ہے۔ رانا ثنا اللہ

بینظیر بھٹو کی شہادت پیپلز پارٹی کا بہت بڑا نقصان ہے اس سے سمبھلنے میں کچھ وقت لگے گا۔ سعید غنی

پیپلز پارٹی پر جو برا وقت چل رہا ہے وہ اس سے بہت جلد باہر آ جائے گی۔ سعید غنی

سیاسی لیڈروں کو عوام کا اعتماد حاصل کرنے کے لئیے کچھ فیصلے کرنے ہوں گے جماعتوں کو خاندانی سیاست سے نکالنا ہو گا۔ خالد مقبول صدیقی

پی ٹی آئی نے پہلی مرتبہ این اے دو سو چھیالیس میں ایم کیو ایم کو انتخابی مہم چلا کر الیکشن جیتنے پر مجبور کیا ہے شفقت محمود

تسلسل کے ساتھ الیکشن ہوتے رہے تو ملک میں جمہوریت مظبوط ہو گی۔ سعید غنی

پاکستان میں جاگیردارانہ نظام ہے اس کے ہوتے ہوئے جمہوریت کا خواب دیکھنا حماقت ہو گی۔ خالد مقبول صدیقی