5 November, 2014 21:10

NADEEM MALIK LIVE

samaa.tv/nadeemmaliklive/

05-NOV-2014

جس جج پر اعتراض ہو جائے وہ خود فیصلہ کرتا ہے کہ وہ کوئی کیس سنے گا یا نہیں۔ جسٹس طارق محمود کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

جسٹس جواد خواجہ زیادہ تر سابقہ چیف جسٹس کے سووموٹو نوٹسز سے متفق ہوتے تھے شاید اسی لئیے عرفان قادر کو ان پر اعتراض ہے۔ طارق محمود

عرفان قادر کے مطابق انہیں جسٹس جواد خواجہ میں تعصب دکھائی دیتا ہے۔ عارف علوی

اس وقت جو جج بیٹھے ہیں اگر ہم تاریخ اٹھا کر دیکھیں تو ان کا مسلم لیگ کے ساتھ کسی نہ کسی طرح تعلق نکل آئے گا۔ قمر زمان کائرہ

میں سمجھتا ہوں کہ پیپلز پارٹی کو اٹھارویں تریم کو قبول نہیں کرنا چاہئیے تھا۔ طارق محمود

پہلے بندے کو خود ثابت کرنا پڑتا تھا کہ وہ صادق اور امین ہے لیکن اب الزام لگانے والے کو گواہی سے ثابت کرنا پڑتا ہے کہ وہ نہیں ہے۔ طارق محمود

سپریم کورٹ نے پوچھا ہے کہ کیا وزیراعظم کو پارلیمنٹ میں جھوٹ بولنے کی وجہ سے نا اہل کیا جا سکتا ہے یا نہیں۔ عارف علوی

عمران خان اور سراج الحق نے آج کی ملاقات میں غلط فہمیاں دور کر لی ہیں۔ عارف علوی

حکومت دھاندلی کے بارے میں کچھ کرنا چاہے تو ٹھیک ورنہ تیس نومبر کو احتجاج ہو گا۔ عارف علوی

انتخابات میں سیاہی کے معاملے کی حکومت کو خود تحقیقات کروانی چاہییں۔ طارق محمود

بار بار احتجاج کے باوجود الیکشن کمشن کمپیوٹر پر فارم چودہ نہیں ڈال رہا جس سے شکوک بڑھ رہے ہیں۔ کائرہ

حکومت عمران خان کے پچھلے الیکشن کی تحقیقات کے مطالبے کو مانے اور ہوش کے ناخن لے۔ کائرہ

اگر فارم چودہ پر آر اوز کے دستخط اور انگوٹھے کے نشان نہ ہوں تو اس کا زمہ دار پریزائڈنگ آفیسر ہوتا ہے۔ طارق محمود

فارم چودہ پر دستخط اور انگوٹھے کے نشان نہ ہونے کا آر او بھی زمہ دار ہوتا ہے۔ عارف علوی

پارلیمنٹ نے جمہوریت کی خاطر نواز شریف کا ساتھ دیا حکومت اسے اپنی طاقت نہ سمجھے ایک واقع سب کچھ بدل سکتا ہے۔ کائرہ

آصف زرداری نے لندن سے فون کر کے نواز شریف کو کہا تھا کہ وہ چار حلقے کھول دیں۔ کائرہ

حکومت ہمارے مطالبات نہیں مانے گی تو ہم سڑکوں پر آیں گے اور نظام کو روک دیں گے۔ عارف علوی

مسلم لیگ ن کے اندر بھی مسائل پیدا ہو چکے ہیں اور اس کا ساتھ دینے والے بھی اب ادھر ادھر ہو چکے ہیں۔ طارق محمود

حکومت کو پچھلے انتخابات کی تحقیقات کروا دینی چاہییں۔ کائرہ