24 July, 2014 22:26

NADEEM MALIK LIVE

samaa.tv/nadeemmaliklive/

24-JULY-2014

اللہ تعالی نے اپنی حدود توڑنے والوں کے لئیے سزایں رکھی ہیں وہ نہ دی جایں تو بہترین معاشرہ بھی بد ترین بن جاتا ہے۔ جنید جمشید کی ندیم ملاک لائیو میں گفتگو

اگر پتہ ہو کہ جرم کرنے پر سزا ملے گی تو کوئی جراْت نہیں کرے گا۔ جنید جمشید

عدلیہ اور کسی بھی شعبے میں جب کوئی کرسی پر بیٹھ جاتا ہے تو پھر وہ سسٹم کا حصہ بن جاتا ہے۔ جنید جمشید

اللہ تعالی نے پچھلی امتوں میں سے جب بھی کسی قوم کو تباہ کیا جھوٹ، بد کاری اور ظلم کی وجہ سے تباہ کیا۔ سید بلال قطب

فلسطین میں عورتوں کوننگا کر کے پھرایا گیا لیکن ہمارا ضمیر نہیں جاگا۔ سید بلال قطب

ہمیں دہشت گردوں کے بارے میں بہت سی باتوں کا آپریشن ضرب عضب کے بعد پتہ چلا ہے۔ جنید جمشید

ہم اپنی تکلیفوں کا حل جہاں ڈھونڈھ رہے ہیں جہاں یہ وہاں نہیں ہے ہماری تکلیفوں کا حل اللہ اور اس کے رسول کے احکامات میں ہے۔ جنید جمشید

ہم نے اسلام کے اتنے بڑے خیال کو چھوٹے دماغوں کے حوالے کر دیا ہے۔ سید بلال قطب

ہم جب کلمہ پڑھ لیں تو پھر دین اور دنیا دو الگ الگ چیزیں نہیں ہو سکتیں۔ کوکب نورانی اوکاڑوی

آج لوگوں کو مدرسوں اور معاشرے میں یہ پڑھایا جا رہا ہے کہ دین اور دنیا دو الگ الگ چیزیں ہیں۔ کوکب اوکاڑوی

آج جھوٹ اور حرام ہماری زندگیوں کا حصہ بن چکے ہیں۔ کوکب اوکاڑوی

ہم سب لوگ مسائل کا تو زکر کرتے ہیں لیکن ان کے حل کی طرف قدم نہیں اٹھاتے۔ کوکب اوکاڑوی

پاکستان میں اسلام کو ملا ازم کہا جاتا ہے اور چند بیگمات اسلام کا مزاق اڑاتی ہیں لیکن ان کے خلاف کچھ نہیں کیا جاتا۔ کوکب اوکاڑوی

ہم نے سکولوں کے سلیبس سے اسلامی ہیروز کو نکال کر لوکل ہیروز کو ڈال دیا ہے۔ سید قطب بلال

ہماری برائیاں ختم ہو سکتی ہیں اگر آدمی اپنی پچھلی زنگی پر توبہ کر لے۔ جنید جمشید