7 July, 2014 21:00

NADEEM MALIK LIVE

samaa.tv/nadeemmaliklive/

07-JULY-2014

میں واضع کرنا چاہتا ہوں کہ میرے عمران خان کے خلاف الیکشن کمشن میں جانے کے پیچھے کوئی سیاسی مقاصد نہیں ہیں۔ ارسلان افتخار کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

میں نے عمران خان کے میرے لائف سٹائل اور گاڑیوں پر اعتراضات کی وجہ سے استعفی دیا ہے۔ ارسلان افتخار

میری بلوچستان انوسٹمنٹ بورڈ میں تعیناتی اس لئیے ہوئی کیونکہ میں بلوچستان کے مختلف منصوبوں کے لئیے ایک ارب ڈالر کی انوسٹمنٹ لے کر آیا تھا۔ ارسلان افتخار

میرے معاملات کا میرے والد کو علم نہیں ہوتا وہ اپنا کام کرتے ہیں اور میں اپنا کام کرتا ہوں۔ ارسلان افتخار

میرے والد چوہدری افتخار کہتے ہیں کہ ان پر عمران خان کے لگائے گئے الزامات میں کوئی صداقت نہیں ہے۔ ارسلان افتخار

میرے پاس عمران خان پر لگائے گئے تمام الزامات کے ثبوت موجود ہیں۔ ارسلان افتخار

عمران خان اور ارسلان افتخار کے معاملے کے ساتھ مسلم لیگ ن کا کوئی تعلق نہیں ہے۔ شاہد خاقان عباسی

عمران خان کا چودہ اگست کو مارچ کرنے کا معاملہ میری سمجھ میں نہیں آ رہا۔ شہلا رضا

میرے خیال میں مشرف کا کیس حل ہوتے ہیں عمران خان ٹھنڈے ہو کر بیٹھ جایں گے۔ شہلا رضا

ہمیں اب بہت سنجیدہ قسم کی الیکشن اصلاحات کرنے کی ضرورت ہے۔ فیصل سبزواری

پاکستان میں ہر الیکشن میں دھاندلی ہوتی ہے امیدوار کو سر پر بیٹھ کر انتخابی رزلٹ لینا پڑتا ہے۔ فیصل سبزواری

دو ہزار تیرہ کے الیکشن میں دھاندلی ہوئی اور دو ہزار اٹھارہ کے الیکشن میں بھی ہو گی۔ شاہی سید

اس وقت ملک کا سب سے بڑا مسئلہ دہشت گردی ہے شریف گھروں کے نوجوان جرائم اور بھتہ خوری میں ملوث ہو چکے ہیں۔ شاہی سید

پنجاب حکومت کی لشکر جھنگوی یا کسی دہشت گرد گروپ کے ساتھ کوئی ہمدردیاں نہیں ہیں۔ شاہد خاقان عباسی

ہم پہلے دن سے کہہ رہے تھے کہ اچھے برے طالبان کا کوئی فرق نہیں ہے یہ سب ایک ہیں۔ شہلا رضا

سچ تو یہ ہے کہ آج پارلیمنٹ میں بھی دہشت گرد گروپوں کی نمائندگی موجود ہے۔ شاہی سید

پاکستان نے اپنے ہمسایہ ملکوں کے ساتھ اچھے تعلقات نہیں رکھے جبکہ بھارت نے تعلقات ٹھیک رکھے ہیں۔ شاہی سید

اچھے اور برے طالبان کی تخصیص ختم ہو چکی اب سب دہشت گردوں کے خلاف کاروائی کی جا رہی ہے۔ شاہد خاقان عباسی

حکومت آئی ڈی پیز کی بھر پور مدد کرنے کی کوشش کر رہی ہے اور انہیں کیش امداد فراہم کر رہی ہے۔ شاہد خاقان عباسی