16 June, 2014 21:19

NADEEM MALIK LIVE

samaa.tv/nadeemmaliklive/

16-JUNE-2014

حکومت نے طالبان سے بات چیت کا فیصلہ کیا تو پی ٹی آئی نے حمایت کی اب فوجی آپریشن کی بھی حمایت کرتی ہے۔ شاہ محمود قریشی کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

ہمارے وزیرستان میں فوجی آپریشن کے متعلق حکومت کی حکمت عملی پر بہت سنجیدہ قسم کے تحفظات ہیں۔ شاہ محمود قریشی

وزیرستان میں فوجی آپریشن کی وجہ سے کے پی کے کو مہاجرین کی کثیر تعداد کا سامنا کرنا پڑے گا حکومت نے اس کا کائی بندو بست نہیں کیا ہے۔ شاہ محمود قریشی

وزیرستان میں فوجی آپریشن سے پہلے کے پی کے کی حکومت کو اعتماد میں لیا جانا چاہئیے تھا لیکن کوئی مشورہ نہیں کیا گیا۔ شاہ محمود قریشی

وزیرستان میں فوج آپریشن سے ہمارے اپنے لوگ متاثر ہو رہے ہیں لوگ اپنے گھروں سے بے گھر ہو رہے ہیں۔ شاہ محمود قریشی

دہشت گردوں کے خلاف آپریشن میں تمام سیاسی جماعتوں علما اور عوام کی مکمل حمایت کی ضرورت ہے۔ شاہ محمود قریشی

پنجاب کے بہت سے شہر دہشت گردوں کا گڑھ ہیں پنجاب حکومت نے آج تک ان کے خلاف کبھی کچھ نہیں کیا۔ طاہرالقادری

ایسے لوگ جو امن کے دشمن ہیں ان کے خلاف آپریشن عین حق ہے۔ طاہرالقادری

پاکستان کی فوج نے دہشت گردوں کے خلاف آپریشن کا آغاز کر کے جہاد کا آغاز کیا ہے۔ طاہرالقادری

قرآن مجید کہتا ہے کہ مسلمانوں کے دو گروہ لڑیں تو ان میں صلح کروا دو لیکن ایک نہ مانے تو اس کے خلاف لڑو۔ طاہرالقادری

میرا پاکستان آنے کا مقصد انقلاب اور دھونس اور دھاندلی کا خاتمہ ہے۔ طاہر القادری

اس وقت میرا پاکستان آنے کا مقصد فوج سے اظہار یکجہتی ہے اور قوم کو فوج کی حمایت میں اکٹھا کرنا ہے۔ طاہرالقادری

میرا پاکستان آمد کے موقع پر دھرنے کا پروگرام نہیں ہے البتہ اگر حکومت نے مجھے ڈیپورٹ کرنے کی حماقت نہ کرے۔ طاہرالقادری

موجودہ حکمرانوں نے میرے خلاف تیس مقدمات قائم کئیے میں تمام میں سے باقاعدہ لڑ کر بیگناہ بری ہوا ہوں۔ طاہر القادری

حکومت الٹا بھی لٹک جائے تو میرے خلاف منی لانڈرنگ اور خیرات کے پیسے کو خود پر خرچنے کا الزام ثابت نہیں کر سکتی۔ طاہر القادری

میرے خلاف منی لانڈرنگ کا الزام ثابت ہو جائے تو اپنی تمام جائیداد ملک کے حوالے کر دوں گا۔ طاہرالقادری

حکمران میرے خلاف منی لانڈرنگ کا الزام ثابت نہ کر سکیں تو اپنی چار ہزار ایکڑ کی رائے ونڈ کی جائیداد ملک کے حوالے کریں۔ طاہرالقادری

حکومت کی پولیس نے مجھ پر حملہ کیا تھا وہ میرے خون کو بکرے کا خون نہیں بتائے گی تو پھر اور کیا بتائے گی۔ طاہرالقادری

حکمران ڈریں اس وقت سے کہ کبھی ان پر حملہ ہو اور پولیس ان کے خون کو کتے کا خون نہ ثابت کر دے۔ طاہر القادری

ہائی کورٹ نے کبھی میرے خلاف کوئی فیصلہ نہیں دیا مجھ پر حملے کا کیس کبھی ہائی کورٹ تک گیا ہی نہیں تھا۔ طاہرالقادری