14 May, 2014 22:02

NADEEM MALIK LIVE

samaa.tv/nadeemmaliklive/

14-MAY-2014

مانسہرہ میں بچی سے زیادتی کرنے والے تینوں ملزمان اس وقت ہماری تحویل میں ہیں۔ خرم رشید ڈی پی او مانسہرہ کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

بچی کی سہیلی انعم اسے بہلا پھسلا کر ملزمان کے پاس لے کر گئی۔ خرم رشید

انعم کی ملزم قاری نصیر سے ڈھائی ماہ سے دوستی تھی اور وہ دونوں فون پر بات کیا کرتے تھے۔ خرم رشید

انعم غریب خاندان سے تعلق رکھتی ہے اور زیادتی کا شکار ہونے والی بچی کا خاندان ہی اس کی کفالت کر رہا تھا۔ خرم رشید

مانسہرہ میں بچی کے ساتھ زیادتی کرنے والوں کو چوراہوں میں لٹکا دینا چاہئیے۔ نبیل گبول

مسلم لیگ ن پنجاب میں عورتوں کے ساتھ زیادتی کے مقدمات کو بہت سنجیدگی کے ساتھ لیتی ہے۔ پرویز ملک

پنجاب میں ایسے بھی واقعات ہوئے ہیں کہ خواتین کو برہنہ کر کے جلوس نکالے گئے ہیں۔ مولا بخش چانڈیو

ہم اسی لئیے کہتے تھے کہ جیوڈیشری اوٹ پٹانگ مقدمات میں وقت ضائع کرنے کی بجائے قانونی اصلاحات لائے۔ مولا بخش چانڈیو

صرف پنجاب میں دو ہزار تیرہ میں عورتوں کے ساتھ زیادتی کے ڈھائی ہزار مقدمات درج کروائے گئے۔ زہرہ یوسف

جن خواتین کے ساتھ زیادتی ہوئی انہیں انصاف ملنے کی شرح نہ ہونے کے برابر ہے۔ زہرہ یوسف

میں نواز شریف کو کریڈٹ دیتا ہوں کہ وہ کراچی کے مسئلے میں دلچسپی لے رہے ہیں۔ نبیل گبول

نواز شریف کے ساتھ کراچی کے مسئلے کی میٹنگ میں چیف آف آرمی سٹاف اور ڈی جی آئی ایس آئی بھی شامل تھے۔ نبیل گبول

اب بھی جرائم پیشہ لوگ یو اے ای میں بیٹھ کر اپنے کارندوں کے زریعے کراچی سے بھتہ وصول کر رہے ہیں۔ نبیل گبول

نواز شریف نے پہلے کراچی میں پولیس کو استعال کیا پھر رینجرز کو اور اب وہ آرمی چیف کو ساتھ لے کر گئے ہیں۔ پرویز ملک

کراچی میں امن امان کا مسئلہ نہیں ہے بلکہ بحران ہے۔ مولا بخش چانڈیو

تمام سیاسی جماعتیں اکٹھی ہوں گی تو کراچی میں امن ہو گا۔ مولا بخش چانڈیو

کراچی کے مسئلے پر صرف لیاری کو الزام دینا درست نہیں ہے تمام شہر میں مسئلہ ہے۔ مولا بخش چانڈیو

وزیر اعظم نے تمام سیاسی جماعتوں کے ساتھ کراچی کے مسئلے پر میٹنگ کی ہے۔ نبیل گبول

میں نے پارلیمنٹ میں بل پیش کیا ہے کہ ملک سے باہر بیٹھے جرائم پیشہ افراد کو واپس لایا جائے۔ نبیل گبول

جہاں پاکستان کا مسئلہ ہو وہاں پر ہر ایک کو پارٹی وابستگی سے باہر نکل آنا چاہئیے۔ مولا بخش چانڈیو

ہماری طالبان کی آپس کی لڑائی پر گہری نظر ہے ان کے خلاف بھی وقت آنے پر بھر پور کاروائی کی جائے گی۔ پرویز ملک

حکومت کو پولیو ورکرز کو مارنے والوں کے خلاف سخت کاروائی کرنے کی ضرورت ہپے۔ نبیل گبول

حکومت کنفیوژ ہے اور تزبزب کا شکار ہے وہ پاکستان کے مسائل پر سب کو ساتھ لے کر چلے۔ مولا بخش چانڈیو

میڈیا کو بھی زمہ داری کا ثبوت دینا چاہئیے جس طرح ڈی جی آئی ایس آئی کے خلاف مہم چلائی گئی بہت غلط بات ہے۔ نبیل گبول